287

امریکا میں کرونا وائرس ختم نہ ہو سکا، ٹرمپ کا بڑا اعلان

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکا میں کو وِڈ نائنٹین کی وبا تو ختم نہ ہوئی تاہم ڈونلڈ ٹرمپ نے اس کے لیے قائم ٹاسک فورس ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ امریکی میڈیا کے مطابق امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے تصدیق کی ہے کہ وائٹ ہاؤس کی کرونا وائرس ٹاسک فورس ختم کی جا رہی ہے۔

غیر ملکی ذرایع ابلاغ کے مطابق امریکی صدر نے کہا کہ اس ٹاسک فورس نے اپنا کام بخوبی نبھایا، مگر اب اس میں تبدیلی کی جائے گی، مشن مکمل نہیں ہوا وائرس کے خلاف جنگ ابھی جاری ہے۔امریکی نائب صدر مائیک پنس نے کہا کہ یہ ٹاسک فورس اگلے چند ہفتوں میں ختم کر دی جائے گی، صدر ٹرمپ نے ٹاسک فورس کے خاتمے کے اعلان پر کہا کہ اسے ختم کرنے کا یہ مطلب نہیں ہے کہ وائرس کے خلاف جنگ ختم ہو گئی ہے۔میڈیا کے مطابق صدر ٹرمپ کے داماد جیریڈ کشنر نئی کرونا وائرس ٹاسک فورس کی سربراہی کریں گے جو کہ کاروبار کی بحالی پر توجہ دے گا۔ خیال رہے کہ امریکا میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 2 ہزار 350 افراد کرونا وائرس سے ہلاک ہو چکے ہیں، ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 72 ہزار سے تجاوز کر گئی، جب کہ امریکا میں وائرس کے ساڑھے 9 لاکھ سے زائد مریض سامنے آ چکے ہیں۔ دوسری جانب امریکی نشریاتی ادارے فوکس نیوز کو انٹرویو میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ امریکا اس سال کے آخر تک کورونا وائرس کے خلاف ویکسین تیار کر لے گا۔ صدر ٹرمپ کا یہ دعویٰ اس وقت سامنے آیا ہے جب حال ہی میں انہوں نے خود ویکسین کی تیاری کے لیے فنڈز کی کمی پر تشویش کا اظہار کیا تھا۔صدر ڈو نلڈ ٹرمپ نے یہ بھی انکشاف کیا کہ ایک محتاط اندازے کے تحت کورونا وائرس وبا میں ایک لاکھ سے زائد امریکیوں کی جانیں چلی جائیں گی۔ قبل ازیں امریکی صدر نے اس حوالے سے دعویٰ کیا تھا کہ اس مہلک وائرس سے امریکا میں 60 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوسکتے ہیں۔ امریکی صدر نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا الزام ایک مرتبہ پھر چین پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کے دنیا بھر میں پھیلنے اور اس کی وجہ سے عالمی معیشت کی تباہی کا ذمہ دار چین ہے۔ اس سے پہلے صدر ٹرمپ نے یہ بھی کہا تھا کہ چین نے انہیں الیکشن ہروانے کے لیے کورونا وائرس پھیلایا۔ واضح رہے کہ کورونا وائرس وبا سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک امریکا ہے جہاں اس مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 70 ہزار کے قریب جا پہنچی ہے جب کہ سوا لاکھ سے زائد امریکی اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں