296

طیب اردوان حقیقی ’’ارطغرل غازی‘‘ بن گئے۔!!! کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو کس طرح کم کرنا ہے؟ ترک صدر خود میں آگئ

انقرہ (ویب ڈیسک) ترک صدر رجب طیب اردوان کا کہنا ہے کہ ویک اینڈ لاک ڈاؤن سے کورونا وبا کے پھیلاؤ کو کم کرنے میں مدد ملی، مرحلہ وار معمولات زندگی میں لوٹ آئیں گے۔ غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا کہ

ترک نے وبائی مرض کے دوران 57 ممالک کی مدد کی، آج 7 صوبوں کے لیے انٹرسٹی ٹریول پابندی کو ختم کرنا ہے، 11 مئی سے مالز، باربر شاپس، کپڑے کی دکانیں کھلنا شروع ہوجائیں گی۔ ترک صدرنے کہا کہ جامعات 15 جون سے دوبارہ تعلیمی سلسلہ شروع کریں گی، 65 سال سے زائد، 20 سال سے کم عمر شہری ویک اینڈ پر 4 گھنٹے کے لیے باہر جاسکتے ہیں۔ رجب طیب اردوان نے کہا کہ ترکی میں معمولات واپس لانے کا مرحلہ مئی، جون، جولائی پر مشتمل ہوگا۔ واضح رہے کہ ترکی میں کورونا وائرس کے باعث 3 ہزار 461 افراد زندگی کی بازی ہار گئے جبکہ وائرس سے 68 ہزار 166 افراد صحت یاب ہوئے۔ یاد رہے کہ اس سے قبل ترک صدر رجب طیب اردوان نے ملک کے سب سے بڑے شہر استنبول میں کورونا مریضوں کے لیے دو نئے اسپتال بنانے اور ملک بھر میں فیس ماسک مفت فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت بڑی تعداد میں مفت فیس ماسک تقسیم کر چکی ہے اور جب تک وبا پر مکمل قابو نہیں پا لیا جاتا، شہریوں کو مفت ماسک کی فراہمی کے لیے بڑے پیمانے پر تیاری کا عمل جاری رہے گا۔ دوسری جانب ترکی کے صدررجب طیب ایردوان ہی ہیں،جن کا دل ان تمام غریب اورنادارنہتے مسلمانوں کے لیےدھڑکتا ہے اوریہ تمام مسلمان بھی ان کو اپنے دلوں میں بسائے ہوئے ہیں اوران کو یقین ہے جس طرح ایردوان نے فلسطینیوں ،کشمیریوں،اوئغرترکوں اورروہنگیا مسلمانوں کوتنہاہ نہیں چھوڑا ہے وہ اس آفت اوروباء کے موقع پربھی تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ ترکی اس وقت صحت کے شعبے کے لحاظ سےتمام اسلامی مالک پرہی نہیں بلکہ زیادہ تر یورپی ممالک پر بھی برتری حاصل کیے ہوئے ہے۔ ایردوان سے قبل ترکی میں صحت کے شعبے کی حالتِ زار کیسی تھی ۔ صرف ایک جملہ ہی کہوں گا جس سے اس دور کے ترکی کی صحت کے شعبے کی عکاسی ہوتی ہے۔ لوگ ٹھٹھرتی سردی میں آدھی رات ہی کو ہسپتال یاکلینک میں ڈاکٹر سے معائنہ کروانے کے لیے لائینوں میں لگ جایا کرتے تھے اور اب۔ فرق صاف ظاہر ہے۔ اب اس کورونا وائرس وباء کے موقع پر تمام ہی مریض بلا امتیاز اسپتالوں میں فائیو سٹار ہوٹلز جیسی سہولتیں حاصل کرتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں ۔ ان سہولتوں کے لحاظ سے کیا امریکہ اور یورپی ممالک ترکی کا مقابلہ کرسکتے ہیں؟ ہر گز نہیں ۔ ایردوان ایک ایسا ویژنری لیڈر ہے جس نے وقت سے بہت پہلےہی ترکی بھر میں شہر حستانےلری City hospitals یعنی شہر اسپتالوں کا جال بچھادیاتھا۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں