298

کورونا کے پاکستانی معیشت پر اثرات۔۔!!آئی ایم ایف نے 1 ارب 39 کروڑ ڈالرز کےریلیف پیکیج کی منظوری دے دی

لاہور(ویب ڈیسک) کورونا وائرس سےنمٹنے کے ریلیف پیکیج کی منظوری ایگزیکٹو بورڈ اجلاس میں دی گئی ۔آئی ایم ایف اعلامیے کے مطابق کورونا وائرس کےباعث پاکستان کی معیشت شدید متاثر ہو رہی ہے،کورونا سےنمٹنےکے لیے بیرونی فنانسنگ کی ضرورت ہے جس کے لئےآئی ایم ایف سپورٹ زرمبادلہ کےذخائرکو بہترکرے گی۔ آئی ایم ایف اعلامیے

کے مطابق ریلیف پیکیج سےبجٹ کی ضروریات کو پورا کیا جا سکے گا، پاکستان نےصحت عامہ پراخراجات بڑھانےکااعلان کیا ہے،پاکستان یہ فنڈزکورونا کےاثرات سےنمٹنے کیلئے استعمال کرسکےگا۔پاکستان کوفنڈزریپڈ فنانسنگ انسٹرومنٹ کی مد میں جاری ہونگے، پاکستان توازن ادائیگی کیلئےہنگامی ضروریات پوری کرسکےگا۔آئی ایم ایف کے مطابق کورونا کی وجہ سےمعاشی صورت حال انتہائی غیر یقینی کا شکارہے، مالی سپورٹ سےزرمبادلہ ذخائرمیں کمی پرقابوپانےمیں مدد ملےگی۔اعلامیے میں کہا گیا کہ آئی ایم ایف پاکستان کےساتھ قریبی رابطے میں ہے،کورونا کےاثرات کم ہوتےہی مذاکرات دوبارہ شروع کیےجائیں گے۔6 ارب ڈالرکےموجودہ ای ایف ایف پروگرام کےتحت بات چیت ہوگی،کورونا کےپاکستانی معیشت پرانتہائی اہم اثرات مرتب ہوئےہیں،حکومت پاکستان نےکورونا وائرس کا پھیلاوروکنےکیلئےتیزی سےاقدامات کیے۔حکومت عوامی صحت پر اخراجات میں اضافہ کررہی ہے۔اس مقصد کیلئےمعاشی پیکیج کا بھی اعلان کیاگیا۔

Source Hassan.Nisar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں