304

حالات بَد سے بَدتر ہونا شروع۔۔!! کراچی کے کتنے علاقوں کو مکمل سیل کردیا گیا؟ انتظامیہ ہنگامی قدم اُٹھانے پر مجبور

کراچی (نیوز ڈیسک ) سندھ حکومت نے کراچی میں ہاٹ اسپاٹ علاقوں کو سیل کرنے کا فیصلہ کرلیا، گزشتہ 48 گھنٹے میں 147مقامی کیسز رپورٹ ہوئے، کراچی کے 6 اضلاع میں 30 سے زائدہاٹ اسپاٹ علاقے ہیں،ان ایریاز کو مکمل بند کیے بغیر وائرس کا پھیلاؤ روکنا ممکن نہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق حکومت سندھ نے کچی آبادیوں

اور گنجان آباد علاقوں میں کورونا کا پھیلاؤ روکنے کیلئے حکمت عملی تیار کرلی، حکومت نے کورونا کے ہاٹ سپاٹ علاقوں کو مکمل سیل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے آج یہاں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں ہاٹ اسپاٹ علاقوں کو نشاندہی کے بعد مکمل سیل کردیا جائے گا۔گزشتہ 48 گھنٹے میں 147کیسز لوکل ٹرانسمیشن سے پھیلے،کراچی کے 6 اضلاع میں 30 سے زائد علاقے ہاٹ اسپاٹ ہیں۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر تشویش ہے۔سماجی رابطوں کو منقطع کرنے اور مکمل آئسولیشن کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے۔ہرضلع میں ہاٹ اسپاٹ علاقوں کی نشاندہی کی جائے گی۔جس کے بعد ہاٹ اسپاٹ ایریاز کو مکمل بند کردیا جائے گا۔ہاٹ اسپاٹ ایریاز میں کورونا ٹیسٹ کی صلاحیت بھی بڑھا دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ ہاٹ اسپاٹ ایریاز کو مکمل بند کیے بغیر وائرس کا پھیلاؤ روکنا ممکن نہیں۔دوسری جانب معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ دنیا بھر میں کورونا مریضوں کی تعداد 22 لاکھ لوگوں میں پھیل چکی ہے، ایک لاکھ 47 ہزار اموات اور پانچ لاکھ 53 ہزار صحت یاب ہوچکے ہیں۔اسی طرح پاکستان میں پچھلے 24 گھنٹے میں 6264 ٹیسٹ ہوئے، جن میں 497 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے، اس طرح پاکستان کل کیسز کی تعداد7025 ہوگئی ہے۔نئے کیسز میں سب سے زیادہ تعداد سندھ 340 رپورٹ ہوئے۔ پنجاب 59، خیبرپختونخواہ 58، بلوچستان 23، اسلام آباد 9، گلگت بلتستان 8، آزاد کشمیرمیں کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ پاکستان میں60 فیصد ٹرانسمیشن مقامی سطح پر ہوئی ہے۔ اسی طرح پچھلے 24 گھنٹے میں11اموات ہوئیں جس سے کل اموات 135 ہوگئی ہیں۔ اسی طرح 44 مریض تشویشناک حالت میں ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ عالمی سطح پر شرح اموات 6.7 فیصد ہے، پاکستان میں1.9 فیصد ہے۔

Source Hassan.Nisar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں