255

بریکنگ نیوز: بھارت کی معروف اداکارہ کے 2 سال قبل اسلام قبول کرنے کی تصدیق ، نام آپ کو حیران کرڈالے گا

بنگلورو (ویب ڈیسک) بھارت کی کنڑا فلم انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی اداکارہ سنجنا گلرانی کے اسلام قبول کرنے کی تصدیق ہوگئی، انہوں نے 2 سال قبل اسلام قبول کیا تھا۔بھارتی ٹی وی چینل نیوز 18 کے مطابق سنجنا گلرانی کو کچھ روز پہلے ہی منشیات کے مقدمے میں گرفتارکیا گیا ہے جس کے بعد ان

ے اسلام قبول کرنے کے حوالے سے خبریں سامنے آنے لگیں۔ سنجنا گلرانی کا اصل نام ارچنا منوہر گلرانی ہے اور انہوں نے 2018 میں اسلام قبول کیا تھا جس کی تصدیق بنگلورو کی دینی درسگاہ دارالعلوم شاہ ولی اللہ نے کی ہے۔دارالعلوم شاہ ولی اللہ کے مہتمم مولانا زین العابدین کے مطابق سنجنا گلرانی نے 9 اکتوبر 2018 کو اسلام قبول کیا تھا ۔ انہیں محکمہ شرعیہ کرناٹک نے اسلام قبول کرنے کا تصدیقی سرٹیفکیٹ بھی جاری کیا تھا جس کے مطابق انہوں نے اپنا نام تبدیل کرکے ماہرہ رکھا تھا۔انہیں اسلام قبول کرنے کا سرٹیفکیٹ عدالتی حکم پر جاری کیا تھا۔ انہوں نے عدالت میں جمع کرائے گئے اپنے ایفی ڈیوٹ میں کہا تھا کہ وہ گزشتہ 10 برس سے اسلام کے بارے میں سنتی آئی ہیں جس کی وجہ سے ان کے اندر تجسس پیدا ہوا اورانہوں نے اسلام کو سمجھنے کی کوشش کی۔ اس کیلئے انہوں نے اسلام کا نہ صرف مطالعہ کیا بلکہ مسلمانوں سے بات چیت کی جس کے بعد وہ اسلام کے اصولوں سے بہت متاثر ہوئیں۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ملک کی طاقتور اور اہم ترین شخصیت کے عشائیے میں اپوزیشن رہنماؤں کی شرکت کا احوال سامنے آگیا، سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا کہ ان شخصیات نے کہاکہ اے پی سی کی کوئی اہمیت نہیں، حکومت کے ساتھ کھڑے ہیں،5سال پورے کرے گی، شہبازشریف خاموش رہے، لیکن بلاول بھٹو نے حکومت مخالف ساری باتیں کیں،عشائیے کے اختتام پر وزیراعظم بھی آگئے۔انہوں نے اپنے تبصرے میں کہا کہ اپوزیشن کی کل اے پی سی ہوگی، نوازشریف نے اپنا ٹویٹر اکاؤنٹ بنا لیا ہے، اب یوٹیوب چینل بھی بنا رہے ہیں، شیخ رشید کہہ رہے ہیں کہ میری بلاول بھٹو، شہباز شریف اور مولانا فضل الرحمان سے ملاقات ہوئی ، ن لیگ سے ش لیگ نکلے گی۔ میری مولانا فضل الرحمان کے بیٹے سے ملاقات ہوئی ان کو کہا اپنے والد کو سمجھاؤ۔شیخ رشید کی یہ ملاقات ان سیاسی شخصیات سے اہم ترین طاقتور شخصیات کے گھر پرعشائیے میں ہوئی،یہ وہی شخصیات ہیں جنہوں نے دھرنے سے قبل مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی تھی۔شرکاء میں شہباز شریف، بلاول بھٹو، شیریں رحمان، خواجہ آصف ، مولانا محمود، صادق سنجرانی، شاہ محمود قریشی اور عشایئے کے اختتام پرجب اپوزیشن کے مہمان چلے گئے تو وزیراعظم عمران خان بھی آگئے۔ ایک دو روز پہلے کی بات ہے ،جب عشائیہ ہوا۔عشائیے میں شہبازشریف خاموش رہے، ان شخصیات نے کہا کہ اے پی سی بالکل بھی نہیں ہوگی،حکومت پانچ سال چلے گی، ہم حکومت کے ساتھ کھڑے ہیں۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں