258

صورتحال کو کنٹرول کرنے کا فیصلہ! پنجاب میں فوج طلب کر لی گئی

لاہور (نیوز ڈیسک ) پنجاب حکومت نے محرم الحرام میں فوج کو طلب کرنے کا فیصلہ کرلیا، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا کہ مسجد ، امام بارگاہوں اور عبادت گاہوں کے فول پروف سکیورٹی انتظامات کیے جائیں گے، مجالس اور جلوسوں کے دوران کورونا ایس اوپیز پر عملدرآمداور ماسک پہننے کی

پابندی کروائی جائے گی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیرصدات ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا۔اجلاس میں کورکمانڈر لاہور، صوبائی وزراء اور سیکرٹریز شریک ہوئے۔اجلاس میں محرم الحرام کے دوران کیے جانیوالے سکیورٹی انتظامات کورونا ایس اوپیز عمل درآمدکا جائزہ لیا گیا۔ مجالس اور جلوسوں کے دوران کورونا ایس اوپیز پر عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی۔کورونا جلد مکمل قابو پالیں گے، لیکن احتیاط بہت ضروری ہے۔ مجالس کے دوران ماسک کی پابندی کی جائے۔ایس اوپیز کی خلاف ورزی کورونا کے دوبارہ پھیلاؤ کا سبب بن سکتی ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ جلوسوں کے روٹ پر تجاوزات کا خاتمہ یقینی بنایا جائے۔ محرم الحرام کے دوران صوبے میں قانون کی عملداری اور ضابطہ اخلاق کوہر صورت یقینی بنایا جائے گا۔ محرم میں امن وامان کی صورتحال کو یقینی بنانے کیلئے فوج کو طلب کیا جائے گا۔ مسجد ، امام بارگاہوں اور عبادتگاہوں کے فول پروف سکیورٹی انتظامات کیے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ مذہبی ہم آہنگی کے فروغ اور فرقہ واریت کے خاتمے کیلئے تمام اقدامات کیے جائیں گے۔سوشل میڈیا کے ذریعے فرقہ واریت پھیلانے والے عناصرکیخلاف کاروائی کی جائے گی۔ اسی طرح پنجاب میں کورونا صورتحال کے تحت لاہور سمیت پنجاب بھر میں اسمارٹ لاک ڈاؤن لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سیکرٹری محکمہ صحت پنجاب محمد عثمان کا کہنا ہے کہ پنجاب میں مائیکرواسمارٹ لاک ڈاؤن لگا دیا گیا ہے۔ اسمارٹ لاک ڈاؤن کا اطلاق آج سے ہوگا۔ کورونا کے مریض والے گھر، دکان کو سیل کیا جائے گا۔ متاثرہ گھر یا دکان کے پورے علاقے کو سیل نہیں کیا جائے گا، متاثرہ شخص گھر پر 14روز قرنطینہ میں رہے گا۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں