256

بریکنگ نیوز: یااللہ خیر : پی آئی اے کی پرواز بڑے حادثے سے بال بال بچ گئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) اسلام آباد سے گلگت پہنچنے والی پی آئی اے کی پرواز حادثے سے بال بال بچ گئی۔پی آئی اے کی پرواز پی کے 605 کے لینڈنگ گیئر کا بولٹ نکل گیا جس کے بعد سول ایوی ایشن نے پرواز کو اڑان بھرنے سے روک دیا۔سول ایوی ایشن کی ایئر سائٹ ٹیم کو

رن وے کی انسپیکشن کے دوران طیارے کا بولٹ ملا۔پی آئی اے انجینئرز کا کہنا ہے کہ جانچ کر رہے ہیں کہ کیا یہ بولٹ اسی طیارے کا ہے۔طیارے کی مکمل انسپکشن شروع کردی گئی۔طیارہ اسلام آباد سے گلگت پہنچا تھا جب کہ واپس اسلام آباد کی طرف اڑان بھرنی تھی۔خیال رہے کہ پی آئی اے کو آئے روز حادثات پیش آتے رہتے ہیں تاہم گذشتہ ماہ پی آئی اے کی پرواز کو تاریخ کا سب سے بڑا حادثہ پیش آیا جس نے پوری قوم کو رنجیدہ کر دیا تھا۔22 مئی کو کراچی میں پی آئی اے کے طیارے کو حادثہ پیش آیا تھا۔کراچی ایئرپورٹ کے قریب عید سے 2 دن قبل دوپہر سوا دو بجے کے قریب پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 8303 گر کر تباہ ہوگئی تھی۔ ایئربس میں 107 افراد سوار تھے جن میں 99 مسافر اور عملے کے 8 افراد شامل تھے۔ ایئربس 320 ایک بج کر 10 منٹ پر لاہور ایئرپورٹ سے کراچی کے لیے روانہ ہوئی تھی۔ پی آئی اے کی پرواز لاہور سے کراچی پہنچی تھی کہ لینڈنگ سے قبل طیارہ گر کر تباہ ہو گیا تھا۔عید سے 2 دن قبل پیش آنے والے اس واقعے نے پورے پاکستان کو عید پر افسردہ کر دیا تھا جس کے بعد ہر طرف سوگ کا سماں تھا۔ اس حادثے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین ابھی تک اپنے پیاروں کی معیتوں کے لئے پریشان ہیں۔ ان کی جانب سے مختلف قسم کی شکایات جمع کروائی جا رہی ہیں۔ تا ہم اس واقعے کی تحقیقات کے لئے فرانس کے ماہرہن کی خصوصی ٹیم 26 مئی کو کراچی پہنچی تھی جو یکم جون کو تحقیقات مکمل کرنے کے بعد اہم شواہد کے ہمراہ واپس روانہ ہو گئی۔ تحقیقات سے متعلق بتایا گیا کہ ایئربس کمپنی کے ماہرین نے پی آئی اے طیارہ حادثہ کی تحقیقات مکمل کرلیں اور جائے وقوعہ سے تمام ضروری شواہد بھی اکھٹے کرلیے ہیں۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں