287

نیب کی شہبازشریف کو گرفتار کرنے کی کوشش ۔۔۔ مسلم لیگ ن کے صدر کو ان آخری لمحات میں کس نے بروقت اطلاع دے کر وہاں سے نکالا ؟ سینئر صحافی کاتہلکہ خیز دعویٰ

لاہور(ویب ڈیسک) سینئر صحافی و تجزیہ کار عمران یعقوب نے دعویٰ کیا ہے کہ نیب کے اعلیٰ افسر نے شہباز شریف کو گرفتاری کیلئے چھاپے سے قبل ٹیلی فون کے ذریعے مطلع کیا تھا۔جی این این کے پروگرام ”ویو پوائنٹ“ میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی عمران یعقوب نے دعویٰ کیا کہ جیسے ہی نیب کی

جانب سے شہباز شریف کو گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا گیا تو نیب کی جانب سے ایک افسر نے پہلے ہی پی ٹی سی ایل نمبر سے فون کرکے چھاپے کے بارے میں مطلع کردیا تھا۔عمران یعقوب نے بتایا کہ نیب کے اعلیٰ افسر کے جس کار خاص کو گرفتاری کے لئے بھجوایا گیا یہ وہی صاحب ہیں جن پر جیل میں مریم نواز کو موبائل فون فراہم کرنے کے الزامات ہیں۔ سینئر صحافی نے بتایا کہ نیب ٹیم نے ماڈل ٹاﺅن میں شہباز شریف کے گھر کی مکمل تلاشی بھی نہیں جبکہ جاتی عمرہ میں جانے والے افسر بھی بغیر چھاپے کے واپس گئے۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف نے اپنی گزشتہ 10 سال کی زرعی آمدن اور اس پر ادا کیے جانے والے ٹیکس کا ریکارڈ نیب کو جمع کرادیا ہے۔نیب دستاویز کے مطابق شہبازشریف نے 10سال کے دوران 8 کروڑایک لاکھ ایک ہزار 705 روپے کمائے جس پر انہوں نے مجموعی طور پر 1 کروڑ 10 لاکھ 21 ہزار 89 روپے ٹیکس دیا۔2009میں شہباز شریف کی آمدنی 30 لاکھ اور ٹیکس 3 لاکھ 93 ہزار جمع کرایا، شہباز شریف نے سب سے زیادہ کمائی 2011 میں 1 کروڑ 65 لاکھ 46 ہزار 705 روپے کی اور اسی برس انہوں نے سب سے زیادہ ٹیکس بھی ادا کیا ۔ انہوں نے 2011 میں 27 لاکھ 82 ہزار 500 روپے کا ٹیکس جمع کرایا۔نیب دستاویز کے مطابق گزشتہ 6 سال میں شہباز شریف کی آمدنی کم ہوئی جس کے باعث انہوں نے ٹیکس بھی کم دیا۔ گزشتہ 3 سال میں شہباز شریف نے 88 لاکھ کمائے اور 12 لاکھ 9 ہزار 250 روپے جمع کرایا۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں