285

اللہ جب دیتا ہے تو چھپر پھاڑ کر دیتا ہے معقولہ درست ثابت ہوا ، معمر شخص کی زندگی بدل گئی

بعض اوقات زندگی میں کچھ ایسے واقعات رونما ہوتے ہیں جو پوری زندگی کو بدل ڈالتے ہیں ایسا ہی کچھ ہوا امریکا میں ایک بے گھر شخص کے ساتھ جو کئی سال سے بے گھر تھا لیکن اچانک اس کا ایک ایسا بینک اکاوئنٹ مل گیا جس میں اتنی رقم جمع تھی جس سے اس نے گھر خرید لیا اور اس کی زندگی ہی بدل گئی۔ امریکی ریاست فلوریڈا کے رہائشی جون ہیلنسکی نامی شخص گھر نہ ہونے کے باعث گزشتہ 3 سال سے کارڈ بکس سے بنے گھر میں زندگی کے شب و روز گزارنے

پر مجبور تھا اور اس کے مطابق وہ دوسروں سے خود کو چھپانے سے اکثر بینچوں کے نیچے سو کر رات کاٹتا۔ جون ہیلنسکی کی یہ حالت دیکھ کر سماجی اداروں اور پولیس نے اسے گھر فراہم کرنے کی کوششوں کا آغاز کردیا جس کے لیے انہوں نے جون سے اس کے بارے میں مکمل معلومات حاصل کیں اور اسی دوران اس بات کا بھی حیرت انگیز انکشاف سامنے آیا کہ جون کا ایک بینک اکاوئنٹ ایسا بھی ہے جسے وہ طویل عرصے سے استعمال نہیں کر رہا لیکن اس میں اتنی رقم موجود ہے جس سے وہ ایک گھر خرید سکتا ہے۔ جون ہیلنسکی کا کہنا تھا کہ وہ اس بینک اکاوئنٹ کو بھول بیٹھا تھا تاہم اس اکاؤنٹ کی دریافت نے اس کی زندگی بدل دی ہے جس سے ملنے والی رقم سے اس نے ایک گھر خرید لیا ہے وہ اپنی زندگی کے باقی ایام سکون سے اپنی چھت کے نیچے گزارے گا۔مزید پڑھئیے :: بڑھاپے کے خلاف جنگ کرنے والے برطانوی سائنسدان نے دعویٰ کردیا ہے کہ وہ کم از کم 150 سال تک زندہ رہے گا اور اس مقصد کے لئے اس نے حیرت انگیز اقدامات شروع کردیئے ہے۔بائیو گیرنٹالوجی ریسرچ فاﺅنڈیشن کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ایلکس زاوو رونکوو روزانہ 100 مختلف قسم کی ادویات کھاتے ہیں اور ہر روز اپنے خون کی بائیوکیمسٹری کو مانیٹر کرتے ہیں جبکہ مختلف قسم کے خلیات کا شمار بھی کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ جسمانی نظام کی مسلسل مانیٹرنگ ور مطلوبہ ادویات کے باقاعدہ استعمال سےوہ 150 سال تک زندہ رہنے کا ہدف حاصل کرسکتے ہیں۔ اخبار ”دی ٹیلی گراف“ کو دئیے گئے ایک انٹرویو میں ڈاکٹر ایلکس نے بتایا کہ عمر میں اضافے کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ جسمانی نہیں بلکہ نفسیاتی نوعیت کی ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ ہم میں سے اکثر یہ سوچتے ہیں کہ ہمارے والدین اور ان سے پہلے بزرگوں کی عمر محدود تھی اور اپنے اردگرد لوگوں کو بھی محدود عمر کے بعد دنیا سے جاتے دیکھ کر سوچتے ہیں کہ سینکڑوں سال زندہ رہنا ممکن نہیں ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ اس نفسیاتی رویے کو بدل کر ہم طویل عمر تک زندہ رہنے کا ہدف حاصل کرسکتے ہیں۔ وہ اپنے ساتھی سائنسدان دمتری کمنسکی کے ساتھ ایک ملین ڈالر کی شرط بھی لگاچکے ہیں اور یہ رقم دونوں میں سے زیادہ عرصے تک زندہ رہنے والے کو ملے گی۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں