304

میرے باڈر پر بیٹھے کسی فوجی کو لاوارث سمجھنے کی غلط فہمی نہ کرنا۔۔۔!!!آرمی چیف کا ایرانی فوج کے سربراہ سے ٹیلی فونک رابطہ،ایرانی سرحد پر باڑ لگانے کا حکم جاری کر دیا

راولپنڈی (ویب ڈیسک) آرمی چیف کا ایرانی فوج کے سربراہ سے ہوئے رابطہ کے دوران سرحدی علاقے میں پاک فوج پر ہوئے حملے پر تحفظات کا اظہار، منگل کے صبح جنرل قمر باجوہ نے میجر جنرل باقری سے ٹیلی فونک رابطہ کیا، پاک ایران سرحد پر باڑ لگانے کے عمل کے آغاز سے متعلق آگاہ کیا، سرحد پر چوکیوں کو مزید فعال بنانے پر زور دیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایران کی مسلح افواج کے سربراہ میجر جنرل محمد حسین باقری سے ٹیلفونک رابطہ کیا جس میں پاکستانی سیکورٹی فورسز پر حالیہ دہشت گرد حملے پر تشویش کا اظہار کیا جس میں پاک ایران سرحد کے قریب 6 سیکورٹی اہلکار شہید ہوئے تھے.ٹیلیفونک رابطے میں دونوں کمانڈرز نے سرحد کے دونوں اطراف حفاظتی اقدامات بڑھانے کے عزم کا اظہار کیا۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ پاکستان نے سرحد پر باڑ لگانا شروع کر دی ہے لیکن سرحدی سلامتی اور انسداد اسمگلنگ سرگرمیوں کو یقینی بنانے کے لئے باہمی تعاون کی ضرورت ہوگی جس کی آڑ میں دہشت گرد اور منشیات کے سمگلر بھی اپنی سرگرمیاں جاری رکھتے ہیں۔دونوں کمانڈرز نے کووڈ۔19 پر بھی تبادلہ خیال کیا اور ایسے مسائل کو حل کرنے کے لئے بارڈر ٹرمینلز کو بہتر بنانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ آرمی چیف نے سرحد پر چوکیوں کو مزید فعال بنانے پر بھی زور دیا۔ پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے باہمی احترام، عدم مداخلت اور برابری کی بنیاد پر علاقائی امن و استحکام کے لئے پاکستان کے عزم کا اعادہ کیا۔

Source : HassanNissar

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں